Thursday, 13 June 2024, 04:29:00 pm
حکومت24سرکاری اداروں کی نجکاری کی خواہاں ہے
June 10, 2024

قومی اسمبلی کو آج(پیر) کو بتایا گیا کہ حکومت آئندہ برسوں میں تقریبا چوبیس سرکاری اداروں کی نجکاری کی خواہاں ہے۔

وقفہ سوالات کے دوران ایک سوال پر وزیرنجکاری عبدالعلیم خان نے کہا کہ ان کمپنیوں میں پاکستان انٹرنیشنل ائیرلائنز ریزولٹ ہوٹل، فرسٹ ویمن بنک، یوٹیلٹی سٹور کارپوریشن اوربجلی کی مختلف تقسیم کار کمپنیاں شامل ہیں۔

ایک اور سوال پر وزیر مملکت برائے خزانہ علی پرویز ملک نے کہا کہ تمام فیلڈ انسورسمنٹ یونٹس کو لوہے اور سٹیل کی اشیاء کی سمگلنگ کی روک تھام کیلئے چوکس کردیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ رواں مالی سال کے دوران سٹیل کی سات لاکھ پچاسی ہزار اٹھائیس کلوگرام اشیاء ضبط کی گئی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ غلط اعلان یا کم وزن کا پتہ لگانے کیلئے تمام کھیپ کا دوبار وزن کیا جاتا ہے۔

اس سے پہلے قومی اسمبلی کا اجلاس آج شام اسلام آباد میں سپیکر ایاز صادق کی سربراہی میں پھر شروع ہوا۔

اجلاس کے آغاز پر لکی مروت میں دہشتگردی کے واقعہ میں شہید سیکورٹی اہلکاروں کی روح کے ایصال ثواب کیلئے فاتحہ خوانی کی گئی۔

رکن قومی اسمبلی علی محمد خان نے فاتحہ پڑھی ۔

توانائی کے وزیر سردار اویس احمد خان لغاری نے کہا ہے کہ لائن لاسسز اور بجلی چوری کے مسئلے کے حل کے بغیر بجلی کی بلاتعطل فراہمی ممکن نہیں ہے۔

نکتہ اعتراض کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان بجلی کے شعبے میں سات سوارب کا نقصان برداشت نہیں کرسکتا اور نقصانات پر قابو پانے کیلئے بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں کی کارکردگی کو بہتر بنانا ہوگا۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ یہ ہم سب کی ذمہ داری ہے کہ ہم سیاسی وابستگی سے قطع نظر بجلی چوری کی روک تھام کیلئے اپنا کردا ادا کریں۔

انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومتوں کو اس سلسلے میں تعاون کرنا ہوگا۔