Thursday, 30 May 2024, 03:36:31 pm

مزید خبریں

 
پاک فوج اور ایف سی بلوچستان (نارتھ) کی جانب سے سول انتظامیہ کے ہمراہ گرینڈ ریسکیو اینڈ ریلیف آپریشن
April 20, 2024

پاک فوج کی جانب سے بلوچستان کے متاثرہ علاقوں میں بڑی پیمانے پر ریلیف اور ریسکیو آپریشن جاری ہیں۔

مشکلات کے باوجود، پاک فوج کی تعینات ریسکیو ٹیمیں تمام علاقوں تک پہنچ گئیں۔

کلاگ ریسکیو ٹیم نے جمعہ زئی اور مرادی گاؤں تک پہنچ کر متاثرہ لوگوں میں کھانے کے پیکیجز تقسیم کیے۔

کرواٹ ریسکیو ٹیم نے سیاہ کوہ کے قریب واقع گاؤں کے مقامی لوگوں میں کھانے کے پیکیجز تقسیم کیے۔

بیلار اور کلانچ کے راستوں کی فوجی دستوں اور مشینری کے ذریعے فوری مرمت بھی جاری۔

تمام گاؤں ، بالخصوص جمعہ زئی اور مرادی میں لوگوں کو ادویات، راشن اور پینے کا پانی مہیا کر دیا گیا ہے اور لوگ اپنے مقامات میں محفوظ ہیں۔

کوسٹل ہائ وے پر موجود مسافروں کو پانی اور خوراک فراہم کی گئیں۔

نوشکی کے نواحی علاقوں انعام بوستا اور ڈاک ایریاز سے بھی سیلاب میں پھنسے افراد کو نکالنے کیلئے ایک خصوصی ہیلی کوپٹر نوشکی روانہ کیا گیا۔

اب تک ہیلی کاپٹر کے ذریعے 150 سے زائد افراد کو محفوظ مقامات تک منتقل کیا جا چکا یے جبکہ 700 خاندانوں میں راشن پیکجز تقسیم کئے گئے ہیں۔

چمن میں سیلاب نے بڑے پیمانے پر تباہی مچائی۔

ایف سی کی جانب سے نواحی علاقوں میں پکے ہوئے کھانے کے 300 پیکٹس تقسیم کیے گئے۔

میڈیکل کیمپ لگاکر 800 سے زائد مریضوں کو مفت علاج معالجے کی سہولیات فراہم کی گئیں۔

ژوب کے علاقے قمر دین کاریز میں ندی نالوں میں پھنسے 100 سے زائد افراد کو ریسکیو کرکے محفوظ مقامات تک منتقل کیا گیا۔

مختلف مقامات پر گھر کی دہلیز تک راشن پہنچانے کا عمل جاری ہے۔