Friday, 21 June 2024, 12:12:48 am
کسی کو آئین دوبارہ تحریر کرنے کی اجازت نہیں دی جا سکتی،عرفان قادر
May 29, 2023

وزیراعظم کے معاون خصوصی عرفان قادر نے کہا ہے کہ عدلیہ کے اندر اختلافات کا حل اور ججوں کی تعیناتی میں سینیارٹی اور فٹنس کے اصول کی پاسداری ملک میں موجودہ بحران کے خاتمے کی دوا ہے۔

انہوں نے پیر کی سہ پہر اسلام آباد میں ایک نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ سپریم کورٹ کو ملک میں سیاسی اور معاشی استحکام کیلئے اپنے اندرونی اختلافات کے حل پر توجہ دینی چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ ججوں کو سینیارٹی کی بنیاد پر ترقی دی جانی چاہیے کیونکہ ایسے جج کو اپنی آزادی برقرار رکھنا مشکل لگتا ہے جسے قبل ازوقت ترقی دی گئی ہو۔عرفان قادر نے کہا کہ اتحادی حکومت عدلیہ اور پارلیمنٹ کو مضبوط کرنا چاہتی ہے۔انہوں نے کہا کہ عدلیہ سمیت ہر ادارے کیلئے بہتر یہی ہے کہ وہ اپنے آئینی دائرہ کار میں رہ کر کام کرے۔ عرفان قادر نے کہاکہ تمام ادارے اپنے آئینی دائرہ کار میں رہتے ہوئے کام کرنے کے پابند ہیں ۔انہوں نے کہاکہ قانون اورآئین کی بالادستی نہایت اہمیت کی حامل ہے اوریہ ملک کے بہترین مفاد میں ہے۔انہوں نے کہاکہ آئین ایک مقدس دستاویز ہے اور کسی کو بھی آئین دوبارہ تحریر کرنے کی اجازت نہیں دی جاسکتی۔انہوں نے کہاکہ حکومت عدلیہ کو مضبوط کرناچاہتی ہے ۔